64

مقبوضہ کشمیر میں سیکیورٹی سخت کر دی گئی

مقبوضہ کشمیر میں سیکیورٹی سخت کر دی گئی


سری نگر:مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے یوم ;آزادی کے پیش نظر سرینگر میں سکیورٹی سخت اور سکیورٹی ایجنسیوں کو چوکنا رہنے کی ہدایت دی گئی ہے ۔ بھارت کے یوم آزادی سے قبل وادی بھر میں سکیورٹی کے غیر معمولی انتظامات کیے گئے ہیں ۔ کسی بھی امکانی گڑبڑی سے نمٹنے کے لیے فورسز کی بھاری تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے جبکہ اہم اور حساس مقامات پر سکیورٹی اہلکاروں کو متحرک کر دیا گیا ہے ۔ خفیہ اداروں نے انکشاف کیا ہے کہ 15 اگست کی تقریبات کے دوران عسکریت پسند حملہ کر سکتے ہیں ۔ تاہم اس کے پیش نظر شیرِ کشمیر اسٹیڈیم سونہ وار کو فوجی
چھانی میں تبدیل کر دیا گیا ہے جہاں یومِ ;آزادی کی سب سے بڑی تقریب منعقد ہونے والی ہے ۔ اسٹیڈیم کے ;آس پاس فورسز کا سخت بندوبست کیا گیا ہے ۔ ایس کے اسٹیڈیم جانے والے راستوں کو سیل کیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ سی سی ٹی وی کیمروں کے علاوہ اسٹیڈیم میں ڈرون سے بھی نظر رکھی جارہی ہے ۔ جگہ جگہ پر بندشیں کھڑی کر کے نہ صرف گاڑیوں کی تلاشی لی جا رہی ہے بلکہ راہگیروں کو بھی مکمل تلاشی سے گزرنا پڑتا ہے ۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز سخت سکیورٹی کے درمیان وادی کے تمام اضلاع میں فل ڈریس ریہرسل تقاریب کا اہتمام کیا گیا ۔ کل جماعتی حریت کانفرنس نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ ہفتہ کو بھارت کے یوم ;آزادی کے موقع پر مکمل ہڑتال کریں ۔ بڑی تعداد میں بھارتی فوجیوں کی تعیناتی کے باوجود لوگوں سرینگر اور وادی کشمیر کے دیگر علاقوں میں پاکستانی جھنڈے لہرائے ۔ وارثین شہداجموں و کشمیر اور تحریک ;آزادی جموں و کشمیر کی طرف سے پورے علاقے میں جاری کئے گئے سینکڑوں پوسٹروں میں کشمیری عوام سے پاکستان کے یوم ;آزادی کو ئ;جشن ;آزادی;آ کے طور پر منانے اور بھارت کے یوم ;آزادی کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کی اپیل کی گئی تھی ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

thanks for your feedback