26

سماہنی سیکٹر پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے تین شہری زخمی

لائن آف کنٹرول سماہنی سیکٹر پر بھارتی فوج کی فائرنگ سے تین شہری زائدہ بیگم دختر کرم داد ساکن چاہی ڈھیری . محمد ساجد ولد محمد ارشاد ساکن چاہی کھرانی .اور محمد عبداللہ ولد محمد صضیر ساکن ٹھاکرہ موہڑہ چاہی زخمی ہوگے زخمیوں کو ہسپتال منتقل کردیا گیا . . .
اسسٹنٹ کمشنر سماہنی

سماہنی
لائن آف کنٹرول سماہنی سیکٹر میں چاہی سونا ویلی اور بڑوھ میں بھارتی فوج کی سویلین آبادی پر اندھا دھند مارٹر شیلنگ کے نتیجہ میں 3شہری زخمی 4 پالتو جانور ہلاک 5زخمی ہو گئے 2 گاڑیاں مارٹر بمباری کے دوران چھلنی ہو گئی عمارت کی چھت میں شگاف، دیواریں چھلنی ہو گئیں سب ڈویژن سماہنی کے لائن آف کنٹرول پر گنجان آبادی کے علاقوں چاہی،سوناویلی اور بڑوھ گاہی میں مارٹر بمباری سے شہری آبادی میں ہونے والے نقصانات
وادی کی آواز کے ذرائع کے مطابق محمد ساجد ولد محمد ارشاد چاہی کھرالی،محمدعبداللہ ولد محمد صغیر چاہی ٹھاکرہ موڑا،زاہدہ بی بی دختر کرم داد،چاہی ڈھیری زخمی ہوئے ہیں جنہیں ایم ڈی ایس بھمبر منتقل کیا گیا ہے بڑوھ گاہی میں محمد شریف ولد محمد صدیق کی ایک بھینس اور دو بچھڑے ہلاک ہوئے ہیں نور حسین ولد رحیم کی چھت میں شگاف پڑ گیا ہے نعیم اختر ولد محمد یونس کی دو گائے زخمی ہوئی ہیں سونا ویلی میں مظہر اقبال ولد ظفر کے رہائشی مکان کی دیواریں چھلنی ہوئی ہیں چاہی میں عابد حسین ولد منظور کی 2 گاڑیاں ایک کی سیکرین جبکہ دوسری کے ٹائر بلاسٹ ہوئے ہیں شاہد محمود ولد شریف کی بکری اور گائے زخمی ہیں عبدالخالق ولد تعظیم اقبال پرویز اقبال وغیرہ کی 4 بھنسیں زخمی ہوئی ہیں سول آبادی پر مارٹر شیلنگ پر مسلح افواج پاکستان نے دندان شکن جواب دیا جس سے توپوں نے گولے اگلنے کا سلسلہ تھم گیا تاہم لائن آف کنٹرول پر فائرنگ وگولہ باری کا سلسلہ وقفہ وقفہ سے جاری ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

thanks for your feedback