36

لیز سکینڈل کو ایک منصوبہ بندی کے ساتھ مجھ سے اور میرے بیٹے سے منسوب کرنا انتہائی مضحکہ خیز ہے،شاہ غلام قادراسپیکرآزاد کشمیر قانون سازاسمبلی

لیز سکینڈل کو ایک منصوبہ بندی کے ساتھ مجھ سے اور میرے بیٹے سے منسوب کرنا انتہائی مضحکہ خیز ہے،شاہ غلام قادرآزاد

کشمیرنیلم:سپیکر آزاد کشمیر قانون سازاسمبلی شاہ غلام قادر نے کہا ہے کہ اللہ تبارک و تعالی کا  شکر گزار ہوں کہ اس نے مجھے پھر سے اپنے لوگوں کے درمیان آنے کے قابل کیا اور نیلم کے باسیوں اور پاکستان مسلم لیگ ن کے کارکنوں کا مشکور ہوں جنہوں نے میری صحت یابی کیلئے نذرانے، خیرات اور دعائیں کیں جن کی بدولت میں صحت یاب ہوا۔ جس انداز میں ماربل سے چلہانہ تک سینکڑوں گاڑیوں اور ہزاروں کارکنوں نے میرا استقبال کیا اس پر مجھے فخر ہے کہ ہم نے آئندہ الیکشن کمپین کی مضبوط بنیاد رکھ دی ہے۔ انہوں نے کہا کہ میری بیماری کے دوران میرے خلاف سازشیں اور پروپیگینڈے سے بہت تکلیف اور دکھ پہنچا ہے۔ انہوں نے کہا کہ لیز سکینڈل کو ایک منصوبہ بندی کے ساتھ مجھ سے اور میرے بیٹے سے منسوب کرنا انتہائی مضحکہ خیز ہے کارکن سازشی عناصر پر کان نہ دھریں انشاء اللہ آئندہ الیکشن میں پہلے سے زیادہ مینڈیٹ کے ساتھ حکومت بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اصل میں مخالفین کو نیلم کی تعمیر و ترقی ہضم نہیں ہو رہی اور  منفی پروپیگنڈے کی سیاست اور  جھوٹی سازشوں کا سہارا لیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ  23لاکھ90ہزار کی لاگت سے ماڈل سائنس کالج کنڈلشاہی اور گورنمنٹ انٹر کالج شاردہ سائنس لیبارٹریز کیلئے آلا ت فر اہم کئے گئے۔ طالبات کی کالج تک رسائی کو آسان بنانے کیلئے گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج آٹھمقام کیلئے  ایک عددبس فراہم کی گئی ہے۔اسی طرح 13کروڑ55لاکھ 17ہزار روپے کی لاگت سے ماڈل سائنس کالج کنڈلشاہی کیلئے اکلاس بلڈنگ کی خرید،بلڈنگ کی مرمتی اور فرنیچر سمیت ضروری آلات کی فراہمی کی گئی۔تقریباً90 کروڑ کی لاگت سے یونیورسٹی کیمپس نیلم کا منصوبہ ایکنک مین زیر کار ہے۔2010 سے 2018 تک کے جملہ بقایاجات آفات سماوی کے کیسز کی ادائیگی۔آفات سماوی کے معاوضہ جات کو 11 سے بڑھاکر 15 کروڑ کردیاگیا۔LOC شہادت پیکیج 3سے بڑھاکر 10 لاکھ کردیاگیا۔نئے اداروں کا قیام کر کے مقامی افراد کو بغیر سفارش اور رشوت کے میرٹ پر تقرریاں کیں۔ مسلم لیگ ن آزاد کشمیر کی حکومت نے اپنے انتخابی منشور کے عین مطابق نیلم کو  دو انتخابی حلقوں میں تقسیم کر کے مراعات اور فنڈز کو دوگنا کیا۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز یہاں اٹھ مقام میں اظہار تشکرریلی کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔سپیکراسمبلی شاہ غلام قادر نے کہاہے کہ ہم نے نیلم ویلی کو تعمیروترقی کے راستے پرگامزن کرکے سیاسی مخالفین کی چودراہٹ اورکھڑپینچی بند کردی۔پیپلزپارٹی آزادکشمیر سمیت چاروں صوبوں میں ختم ہوگئی۔آئندہ الیکشن میں بحیرہ عرب میں غرق ہوجائے گی۔میرے خلاف سازش کرنیوالوں کے ہاتھ کچھ نہیں آئے گا۔ آئندہ50ہزار کی لیڈ سے الیکشن جیتیں گئے۔پی پی دور حکومت میں نوکریاں یہاں کے ہوٹلوں پر فروخت ہوتی تھی اب ان کے ٹکٹ فروخت ہوں گئے۔نیلم ویلی کے عوام کو زندگی کی تمام بنیادی سہولیات کی فراہمی تک ہماری جدوجہد جاری رہے گی۔ سپیکر اسمبلی شاہ غلام قادر نے کہاکہ یہاں ہمارے سیاسی مخالفین ماضی میں میرے کاغذات مسترد کرانے کے لیے سپریم کورئئٹ تک گئے۔

اللہ تعالیٰ نے ان کو شکست دی۔میں اپنے کارکنوں کا مشکور ہوں انہوں نے آج میری بہت عزت افضائی کی۔انہوں نے کہاکہ اگرمیں زمین الاٹ کراؤں تویہ میراحق ہے۔لیکن اپوزیشن نے اسے ایشو بنایا اور اسی کا منفی پراپیگنڈہ کیاگیا۔ محکمہ جنگلات صرف دوکنال اراضی الاٹ کرسکتاہے۔ لیکن اپوزیشن نے ہم پر 500کنال اراضی کاالزام لگایا جب سے میں نے نیلم کی سیاست شروع کی اس وقت سے یہ لوگ میرے خلاف سازشیں کررہے ہیں ان کو نیلم کی تعمیروترقی پسند نہیں۔ اسی وجہ سے ان کو شکست ہورہی ہے۔انہوں نے حوالہ دیکر کہاکہ اٹھ مقام سے دودھنیال سڑک 90کروڑ مالیت، شاردہ سے کیل 68کروڑ مالیت سے سڑک کی تعمیر جاتی ہے۔کیل سے پھولاوی 60کروڑ سے تعمیر ہورہی ہے۔اپوزیشن والوں کو تکلیف ہوتی ہے سال 2015میں شاہراہ نیلم کاایک ارب پانچ کرؤڑ کاٹینڈر ہونا ہوناتھا لیکن پی پی دور حکومت میں 15کرؤڑ ایڈوانس کے نہ ملنے پر منصوبہ ڈراپ کردیاگیا۔ہم نے عرصہ تین سال میں کیرن اورلیسواہ بائی پاس سڑکیں تعمیر کروائیں جوسابقہ حکومت 10سال کے عرصہ میں نہ کرسکی۔ انہوں نے کہاکہ ڈھائی کروڑ کی لاگت سے سے اٹھ مقام میں ب سٹینڈ کی تعمیر ہورہی ہے۔ ساری باتیں کرؤں تو ناراضگی ہوجاتی ہے۔ یونیورسٹی کیمپس کے لیے 193کنال اراضی خرید کرائی۔ 5 کنال اراضی اٹھ مقام میں سکول کے لیے ہم نے دلوائی۔ انہوں نے ماضی کاحوالہ دیکر کہاکہ میں نے الیکشن میں وعدہ کیاتھا کہ میں رات کو سفر نہیں کرؤنگا۔ اسی وعدے پرقائم ہوں۔ اپوزیشن والے اپنے دور حکومت میں رات کوشاہراہ نیلم پرسفر کرتے رہے۔ انہوں نے کہاکہ نیلم ویلی سرحدی علاقہ ہے۔ جویہاں انتشار پیداکریگا۔ اس کاقلعہ قمعہ کیاجائے گا۔انہوں نے کہاکہ ہماراپریس کلب والوں کیساتھ کوئی جھگڑانہیں لیکن جعلی خبرکی تحقیقات کیلئے پریس فاؤنڈیشن کے چیئرمین سے رجوع کرونگا۔اس سے پہلے سپیکر اسمبلی شاہ غلام قادر خطاب کرنے کے لیے جب اٹھ مقام پہنچے توکارکنوں نے اپنی کندھے پر اٹھایاان پر گل پاشی کی گئی اور انہیں پھولوں کے ہار پہنائے گئے۔کارکنوں اور مسلم لیگ ن کے عہدیداروں کی ایک بڑی تعداد امڈ کراٹھ مقام پہنچی۔ اس موقع پر کارکنوں نے مسلم لیگ ن زندہ باد، شاہ غلام قادر زندہ باد،شاہ دے نحرے بجن گئے کے فلک شگاف نعرے لگائے
 سپیکراسمبلی شاہ غلام قادر نے خطاب کے دوران شاہاراہ نیلم کی تعمیر کے لہیے وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر خان کے تعاون کاخصوصی طور پر شکریہ اداکیا۔ سپیکراسمبلی نے میاں نوازشریف، پاک فوج، مریم نواز، شہباز شریف زندہ باداور کشمیر بنے گاپاکستان کے فلگ شگاف نعرے بھی لگائے۔؎لیگی کارکنوں کے بڑے بڑے قافلے اپنے محبو ب لیڈر کے استقبال کیلئے باب نیلم پہنچ گئے جہاں سے سپیکر اسمبلی کو اٹھ مقام تک ایک عظیم الشان ریلی میں لایاگیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

thanks for your feedback