67

اہلیان پونچھ کی قربانیاں حقیقی معنوں میں سنہری حروف میں لکھے جانے کے قابل ہیں،راجہ محمد فاروق حیدرخان

اہلیان پونچھ کی قربانیاں حقیقی معنوں میں سنہری حروف میں لکھے جانے کے قابل ہیں،راجہ فاروق حیدرخان

سدھنوتی:وزیر اعظم آزادجموں وکشمیر وصدر مسلم لیگ ن راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہا ہے کہ ریاست کے تشخص اور مقبوضہ کشمیر کے عوام کی مکمل حمایت کےلئے آزادکشمیر کی ساری سیاسی جماعتوں سے کہتا ہوں کہ آئیں ہمارے ساتھ چلیں ۔ یہ خطہ ہماری شناخت ہے ۔ آزادکشمیر کے عوام نے جدوجہد آزادی میں اپنا بھرپور حصہ ڈالاہے ۔اہلیان پونچھ کی قربانیاں حقیقی معنوں میں سنہری حروف میں لکھے جانے کے قابل ہیں ۔ سدھن قبیلے کے جری اور بہادر لوگوںنے ایک تاریخ رقم کی ہے ۔ آج مقبوضہ کشمیر میںجرات اور بہادری کی تاریخ دہرائی جارہی ہے ۔ آزادکشمیرکے اندر جمہوری نظام کے قیام میںاہلیان پونچھ نے قائدانہ کردار ادا کیا ۔ ان خیالات کاا ظہار انہوںنے سدھن قبیلہ کے جد امجد نواب جسی خان کی برسی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر وزیر صحت ڈاکٹر محمد نجیب نقی خان ، سابق وزراءسردار سیاب خالد اور سردار طاہر انور، چیئرمین علماءو مشائخ کونسل عبیداللہ فاروقی ، ن لیگ سدھنوتی کے صدرحاجی منشاء، نواب جسی خان فاونڈیشن کے صدر سردار تنویر خادم ودیگر نے بھی خطاب کیا۔ وزیر اعظم نے کہاکہ اقتدار اور اختیار منجانب رب العزت ہے ۔ جب تک اس کی ذات چاہے گی رہیں گے ۔ چار سالوں میں آزادکشمیر میں نمایاں تبدیلی آئی ۔ مالیاتی ایوارڈ میں ہمارا حصہ 2.47تھا جو کہ 2.27فیصدکر دیا گیا ہے جسے ہم نے بڑھا کر دوبارہ3.64فیصد کر دیا۔ ابھی تک سٹیٹ بینک سے کوئی قرضنہیں لیا۔ کبھی حکومت خسار ے میں نہیں گئی ۔ سب سے بڑا کام ختم نبوت کا قانون پاس کرنا ہے ۔ ہم نے میرٹ پر روزگار دیا ۔ فیملی کورٹس کا قیام عمل میں لایا۔ تیرہویں ترمیم کے ذریعے اختیارات واپس لائے ۔ اس میں44سال لگے ہیں ۔ حکومت پاکستان سے موثر یقین چاہتے ہیں کہ وہ کشمیریوں کے اوپر مظالم اور ڈیمو گرافی تبدیل کرنے کے خلاف آخری حد تک جائیں گے۔ وزیر عظم آزادکشمیر نے کہا کہ عمران خان ارطغرل غازی بنیں اور کشمیریوں کےلئے میدا ن میں نکلیں ، میں بھی ان کے ساتھ ہونگا۔ ہندوستان سے ڈرنے کی ضرورت نہیں ، اللہ رب العزت کی ذات پر مکمل ایمان رکھیں وہ اپنے دین کی سربلندی اور اس کے رسول کی امت کی حفاظت کےلئے لڑنے والوں کی مدد فرماتا ہے ۔ کشمیریوں کی آہ و پکار سن کر ہماری اور اہل پاکستان کی ذمہ داری ہے کہ ان کی مدد کریں۔ انہوں نے کہاکہ ہندوستان ساڑھے پانچ لاکھ غیر ریاستی باشندوں کو ووٹ کا حق دے رہا ہے اور حلقہ بندیاں کر کے مسلم اکثریت ختم کرنا چاہ رہا ہے ۔ وزیر اعظم نے کہاکہ آنے والے تین سال نہایت اہمیت کے حامل ہیں ۔ حکومت پاکستان کا دفاع، آبی وسائل اور بقاءکا دارومدار کشمیر پر ہے ۔ پاکستان پر ہمارا سب سے زیادہ حق ہے ۔ اس کے بعد مہاجرین کا ہے ۔ غازی ملت شاہراہ کا نام تبدیل نہیں کیا گیا جبکہ راولاکوٹ سے آگے شاہراہ کا نام ’شاہراہ پونچھ‘ ہوگا۔ پونچھ بھی بہت بڑا نام ہے ۔ یہاں کے لوگوں نے بہت کام کیا ۔راجہ محمد فاروق حیدرخان نے کہاکہ احتساب کے قانون کودرست کیا ہے اور ایسا نظام لایا ہے کہ کسی کی پگڑی نہ اچھالی جائے ۔ سزا سے پہلے لوگوں کو مجرم نہیں بنا سکتے۔ نواب جسی خان کے دربار تک سڑک ، گراﺅنڈ اور مزار کی تعمیر کا اعلان کرتے ہوئے وزیر اعظم آزادکشمیر نے کہاکہ عمائدین کے مقبرہ جات بھی بنائیں گے تاکہ آنیوالی نسل کو ان کا پیغام پہنچایا جا سکے۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں مقبوضہ کشمیر کے لوگوں کےلئے باہر نکلنا ہے ۔غلامی اور آزادی میں بہت بڑا فرق ہے یہ آزادی بڑی مشکل سے حاصل کی گئی ہے ، جب تک آزادکشمیر موجود ہے تحریک آزادی کشمیر کو کوئی ختم نہیں کر سکتا۔ انہوں نے کہاکہ اپنے اسلاف کی قربانیوں کو یاد رکھیں اور ان کی تعلیمات کو یاد رکھ کر باغیرت زندگی گزاریں۔وزیر اعظم نے کہاکہ عوام نے آئندہ الیکشن میں فیصلہ کرنا ہے کہ انہیں کشمیری قوم کی ترجمانی کرنے والے چاہیں یا پھر چاپلوسی اور مکھن لگانے والے ۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر صحت و خزانہ ڈاکٹر محمد نجیب نقی نے کہا کہ وزیراعظم راجہ فاروق حیدر کا اس علاقہ اور تحریک آزادی اور تاریخ کا تعلق ہے کہ وہ تمام مصروفیات کو بالاے طاق رکھ کر یہاں تشریف لائے، انہوں نے کہا کہ 5 اگست 2019 کے بعد کشمیر کا مقدمہ فاروق حیدر خان نے جس طرح اٹھایا کوئی بھی دوسرا لیڈر نہیں کر سکا، انہوں نے کہا کشمیر پر بھارتی مظالم اور کشمیر کی ڈیمو گرافی کو تبدیلی پر فاروق حیدرخان نے تمام فورمز پر دیدہ دلیری سے بات کی۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ دور حکومت میں جتنے ترقیاتی کام ہوے ان کی مثال نہیں ملتی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

thanks for your feedback