183

ترکی اور یونان میں شدید زلزلہ، عمارتیں منہدم، سونامی سے عمارتیں زیرِ آب

ترکی اور یونان میں شدید زلزلہ، عمارتیں منہدم، سونامی سے عمارتیں زیرِ آب

دھواں نیٹ آبزرور(بی بی سی نیوز)ترکی میں ایجین ساحل اور یونان کے شمالی جزیرے سیموس میں زلزلے کے شدید جھٹکے محسوس ہوئے ہیں۔

امریکی ارضیاتی سروے کے مطابق ترکی کے مغربی صوبے امزیر کے ساحل سے سترہ کلو میٹر دور زلزلہ آیا ہے جس کی شدت ریکٹر اسیکل پر سات ریکارڈ کی گئی ہے




۔

ترکی سے موصول ہونے والی آخری اطلاعات میں کسی جانی نقصان کی کوئی خبر نہیں ملی تھی لیکن ازمیر سے ایسی تصاویر ملی ہیں جن میں زلزلے کی شدت سے عمارتوں کو منہدم ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔




اطلاعات کے مطابق زلزلے کے جھٹکے یونان اور کریت کے علاقے میں بھی محسوس کیے گئے۔




ایسی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر گردش کر رہی ہیں جن میں لوگوں کو ملبہ ہٹاتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے لیکن ان ویڈیوز کی تصدیق نہیں ہو سکی ہے۔

ترکی کے تیسرے سب سے بڑے شہر ازمیر میں زلزلے کے جھٹکوں سے گھبرا کر لوگ خوف اور سراسیمگی کے عالم میں سڑکوں اور گلیوں میں نکل آئے




۔

یہ اطلاعات بھی ہیں کہ سطحِ سمندر بلند ہونے کے باعث شہر سیلابی صورتحال بھی پیدا ہو گئی ہے اور کچھ ماہی گیروں کے لاپتہ ہونے کی بھی خبریں ہیں۔




دوسری جانب یونان میں زلزلے کے باعٹ آنے والے سونامی کی وجہ سے بندگار سیموس میں کئی عمارتیں زیرِ آب آ گئی ہیں۔

جزیرے پر موجود لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ ساحل سے دور رہیں۔

اس سال جنوری میں ترکی کے صوبے الازگ کے قصبے سیورائس میں آنے والے زلزلے میں 30 افراد ہلاک اور 1600 زخمی ہو گئے تھے۔

اس سے پہلے 1999 میں ترکی کے شہر استنبول کے قریب ازمت میں آنے والے زلزلے میں 17000 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

thanks for your feedback